See more of PTI Rajanpur - Official by logging into Facebook
Message this Page, learn about upcoming events and more.
See more of PTI Rajanpur - Official by logging into Facebook
Message this Page, learn about upcoming events and more.
Not Now
Community
Icon of invite friends to like the lage
Invite your friends to like this Page
Highlights info row image
2,871 people like this
Highlights info row image
2,861 people follow this
Photos
'‎کرپشن کرنا نظریہ پاکستان کے مطابق ہے؟؟؟‎'
'‎ہمیں اختلاف اس بات پر نہیں کہ آپ تحریک آنصاف کو تنقید کا نشانہ بناتے ہیں، افسوس اور دکھ اس بات کا ہے آپ کرپشن کو حلال کرکہ عوام کو پیش کررہے ہیں۔‎'
PTI Rajanpur - Official's photo.
PTI Rajanpur - Official's photo.
PTI Rajanpur - Official's photo.
'‎عمران خان ہمارے کلچر کو تباہ کررہا ہے
------------------------------------------
یہ جملہ آج کل پٹواری دانشوران ہر جگہ بولتے نظر آتے ہیں اور اگر ان سے وجہ پوچھیں تو ان کا جواب یہ ہوتا ہے کہ عمران خان اپنے جلسوں میں نوازشریف کو " اوئے " کہہ کر مخاطب کیا کرتا تھا اور اس کی جماعت کے سپورٹر سوشل میڈیا پر گالم گلوچ کرتے ہیں۔

آئیں زرا غیرجانبداری سے ان پٹواری دانشوڑان کی اس بات کا پوسٹ مارٹم کرتے ہیں:

1 فروری 1965 کو پاکستان کے پہلے صدارتی انتخابات منعقد ہوئے جن میں صدر ایوب خان اور قائداعظم کی بہن فاطمہ جناح نے حصہ لیا۔ یہ الیکشن بالواسطہ تھے یعنی بجائے براہ راست عوام کے ووٹ ڈالنے کے، بنیادی جمہوریت کے 80 ہزار اراکین (کونسلرز) نے پاکستان کے اگلے صدر کا انتخاب کرنا تھا۔ 
الیکشن کیمپین شروع ہوئی اور ہمارے سیاستدان یہ بھول گئے کہ فاطمہ جناح اس ملک کے بانی قائداعظم کی بہن تھیں۔ فاطمہ جناح کے خلاف غلیظ ترین انتخابی میم شروع کی گئی جس میں انہیں بدکردار اور آوارہ عورت تک کے طعنے دیئے گئے۔ موجودہ وفاقی وزیر اور ن لیگ کے اہم رہنما خرم دستگیر کا والد غلام دستگیر خان گوجرانوالہ میں ایک کتیا کے گلے میں دوپٹہ ڈال کر اسے ہر جگہ جلسہ میں ساتھ رکھتا اورعوام سے کہتا کہ ایک طرف ایوب شیر اور دوسری طرف یہ کتیا۔
دھاندلی زدہ الیکشن کا نتیجہ وہی نکلنا تھا جس کا سب کو پتہ تھا، ایوب خان صدر منتخب ہوگیا اور فاطمہ جناح اپنے بھائی کی روح کو مزید روتے نہ دیکھ سکی اوراللہ کو پیاری ہوگئیں۔

بعد میں جب مرد مومن مرد حق، خلیفتہ المسلمین جنرل ضیا کی حکومت آئی تو غلام دستگیر کو بہبود آبادی کا وفاقی وزیر بنا دیا، مقصد شاید اس کی ان خدمات کا اعتراف تھا جو اس نے 65 کے الیکشن میں فاطمہ جناح کو کتیا سے مشابہت دے کر دکھائی تھیں۔

ہمارے دائیں بازو کے تمام دانشوران کے نزدیک ضیا آج بھی اخلاقیات کا پیکر ہے اور آج تک کبھی کسی نے یہ نہیں کہا کہ غلام دستگیر جیسے شخص کو وزیر بنا کر تم نے قوم کا اخلاق تباہ کرڈالا۔

اسی دستگیر کا بیٹا خرم دستگیر نوازشریف کا دست راست ہے اور نوازشریف پر بھی کبھی اس حوالے سے کوئی الزام نہیں لگ سکا۔

2۔

1988 کے الیکشن میں بینظیر اور نصرت بھٹو کی تصاویر جہاز سے گرانے والے واقعے سے آپ سب آگاہ ہیں اور میں مزید کچھ لکھ کر وقت ضائع نہیں کروں گا۔ نوازشریف نے دنیا کی تاریخ کی غلیظ ترین الیکشن کیمپین چلائی اور آج تک کبھی کسی دانشور کو یہ کہنے کی توفیق نہیں ہوئی کہ نوازشریف کی وجہ سے نوجوان نسل کا اخلاق تباہ ہوگیا۔ شاید ان دانشوران کے نزدیک عورت کا یہی مقام ہے کہ اس کی جعلی تصاویر جہازوں سے گرائی جائیں۔ ہوسکتا ہے کہ ان کی اپنی عورتوں کے ساتھ بھی اگر نوازشریف یہ سلوک کرتا تو یہ اس پر بھی نوازشریف کی تعریفیں ہی کرتے۔

3۔ 

1988 سے لے کر 1999 تک شیخ رشید اور ملتان کا شیخ طاہر رشید ن لیگ کے سب سے زیادہ بڑبولے اراکین قومی اسمبلی ہوا کرتے تھے۔ بینظیر نے ایک دفعہ اسمبلی میں بیان دیا کہ 
"مصروفیت کی وجہ سے اس کی ایک ٹانگ کراچی اور دوسری ٹانگ اسلام آباد میں ہوتی ہے" 
جس پر شیخ رشید نے فقرہ کسا کہ 
"ملتان والوں کی تو پھر موج رہتی ہوگی"
اس پر ن لیگ کے اراکین نے دل کھول کر ڈیسک بجائے اور بینظیر آنسوؤں کے ساتھ وہاں سے نکل کر اپنے چیمبر میں آگئی۔ 
اگلے دن کے اخبارات میں سوائے ارشاد احمد حقانی مرحوم کے، کسی بھی " اسلام پسند " کالم نویس کو اس واقعے کی مذمت کرنے کی توفیق نہیں ہوئی۔ کسی نے یہ نہیں کہا کہ ن لیگ قوم کا اخلاق تباہ کررہی ہے۔ 

بینظیر نے اپنے دور میں اتفاق فاؤنڈری کے سکریپ امپورٹ پر ڈیوٹی لگا دی۔ جواب میں جب نوازشریف کی حکومت آئی تو اس نے زرداری کو جیل میں ڈال دیا۔ بینظیر نے قومی اسمبلی میں کھڑے ہو کر کہا کہ نوازشریف کے بس میں ہو تو یہ میرے بچوں سے دودھ بھی چھین لے۔

جواب میں ن لیگ کے وزیر نے کھڑے ہو کر کہا کہ بی بی تم نے اپنے دور میں نوازشریف کا لوہا پکڑا، اب نوازشریف تمہارا دودھ پکڑ رہا ہے، گھبراؤ مت۔
ایک دفعہ پھر قومی اسمبلی میں ن لیگ کے اراکین نے ڈیسک بجانا شروع کردیے اور پریس گیلری سے قہقہے گونجنا شروع ہوگئے، بینظیر ایک مرتبہ پھر آنسو بھری آنکھوں سے وہاں سے رخصت ہوگئی۔

اس دن سے لے کر آج تک، کسی " اسلام پسند " کو توفیق نہیں ہوئی کہ وہ نوازشریف پر قوم کا اخلاق تباہ کرنے کا الزام لگا سکے۔

4۔ 

جلاوطنی کے ابتدائی دور میں نوازشریف قسم کھا کر   کسی قسم کے معاہدے کی موجودگی سے انکار کرتا رہا، لیکن پھر جب سعودی وزیر نے معاہدے کی کاپی دکھا دی تو کہنے لگا کہ یہ معاہدہ 10 سال کا نہیں بلکہ 5 سال کا تھا۔ 
اسی طرح شریف فیملی 2015 تک لندن فلیٹس کی ملکیت کا انکار کرتی رہی۔ آپ کو 2015 کے آخر  تک کوئی ایک بیان ایسا نہیں ملے گا جس میں انہوں نے لندن فلیٹس کی ملکیت کا اعتراف کیا ہو۔ 2016 میں پانامہ لیکس ہوا، ایک ایک کرکے تمام ثبوت سامنے آئے تو اب یہ لوگ مان گئے ہیں کہ وہ فلیٹس ان کے ہیں۔
1983 سے لے کر 1999 تک کے 16 برسوں میں نوازشریف نے مجموعی انکم ٹیکس کی مد میں صرف ساڑھے تین لاکھ روپے دیئے لیکن اندرون و بیرون ملک جائیدادیں اربوں ڈالرز کی بنا لیں۔
مسلسل جھوٹ اور کرپشن کی ان کھلی حرکات دیکھنے کے باوجود بھی آج تک کسی " اسلام پسند " کالم نویس نے یہ نہیں کہا کہ نوازشریف نے اپنے جھوٹ اور کرپشن سے قوم کا اخلاق تباہ کردیا۔

حاصل کلام
------------
بات دراصل یہ ہے کہ ان پٹواری دانشوروں کو اخلاقیات سے کوئی سروکار نہیں۔ یہ لوگ تو اخلاقیات کی ضد ہیں۔ ان کی اصل تکلیف یہ ہے کہ عمران خان کی شکل میں نوازشریف کیلئے ایک بہت بڑا خطرہ کھڑا ہوچکا ہے۔ اگر نوازشریف کو ضرب لگتی ہے تو پھر ان سب پٹواری دانشوروں کے مفادات کو بھی ضرب لگتی ہے جو اپنے وقتی فوائد اور لفافوں کے تابع ہو کر نوازشریف کو مضبوط کرنے میں لگے رہتے ہیں۔

عمران خان کا سپورٹر اگر سوشل میڈیا پر گالیاں دیتا ہے تو اس کی وجہ اس کی وہ فرسٹریشن ہے جو اس مافیا کے ملک پر پنجے گاڑھے رہنے کی وجہ سے پیدا ہوئی۔ 

جب نوازشریف کی تمام تر کرپشن کے باوجود شامی، قاسمی، صافی، جاوید چوہدری، طلعت حسین اور ان جیسے دوسرے پٹواری صحافی اس پر تنقید نہ کریں بلکہ الٹا عمران خان کو ملک کی تمام برائیوں کی جڑ قرار دیں تو پھر تحریک انصاف کا ایک عام سپورٹر انہیں سوشل میڈیا پر گالیاں نہیں دے گا تو کیا ان پر چادریں چڑھائے گا؟

اصل بات یہ ہے کہ جس طرح سیاست میں عمران خان نے نوازشریف کی دم پر پاؤں رکھ دیا ہے اور وہ بلبلاتا پھر رہا ہے، بالکل اسی طرح سوشل میڈیا پر ان پٹواری صحافیوں کی دم پر بھی غیرمعروف ایکٹیوسٹس نے پاؤں رکھ دیا ہے جس کی وجہ سے ان کی چیاؤں چیاؤں تھمنے کا نام نہیں لے رہی۔

اگر فاطمہ جناح کو کتی سے مشابہت دے کر، بینظیر کے خلاف فحش جملے بازی کس کر، نوازشریف کے مسلسل جھوٹ اور کرپشن کے ثبوتوں سے قوم کا اخلاق نہیں بگڑسکا تو پھر خاطر جمع رکھیں، عمران خان کے " اوئے " کہنے سے بھی قوم کے اخلاق کو کچھ نہیں ہونے والا۔

ہاں، اگر آپ کو لفظ " کھوتی کے بچے " سے چڑ ہے تو یقین کریں کہ میں یہ لفظ اس وقت تک کہنے سے باز نہیں آؤں گا جب تک آپ لوگ نوازشریف کو کرپٹ کہنا نہ  شروع کردیں۔

تب تک کیلئے ان پٹواری صحافیوں یعنی کھوتی کے بچوں کی ایسے ہی پٹائی ہوتی رہے گی، خوشبو لگا کے!!! 

# by Anonymous author‎'
'‎چیرمین پی ٹی آئی‎'
'‎سچ اور لفافے لے کر جھوٹ بولنے میں فرق

یوں تو جنگ اور جیو آج کل جے آئی ٹی کے معملات میں نواز شریف کی بی ٹیم بنا ہوا ہے لیکن یہ لفافی تو بین الاقوامی مسائل میں بھی نواز شریف سے لفافے لے کر جھوٹ بولنا شروع ہوچکے ہیں. 

جسکی ایک مثال ابھی حال ہی میں نواز شریف کا دورہ سعودی عرب تھا جس میں جیو کے مطابق نواز شریف ثالثی کا کردار ادا کرنے گئے تھے لیکن جھوٹ کا بھانڈا سعودی سفیر نے ہی پھوڑ دیا.‎'
'‎پاکستان تحریک انصاف کی نئی تنظیم سازی کا نوٹیفیکیشن‎'
Videos
People Also Like

کرپشن کرنا نظریہ پاکستان کے مطابق ہے؟؟؟

No automatic alt text available.

ہمیں اختلاف اس بات پر نہیں کہ آپ تحریک آنصاف کو تنقید کا نشانہ بناتے ہیں، افسوس اور دکھ اس بات کا ہے آپ کرپشن کو حلال کرکہ عوام کو پیش کررہے ہیں۔

Image may contain: 8 people, text
43,418 Views
43,418 Views
Pakistan Tehreek-e-Insaf
9 hrs

ن لیگ کی لفافہ پالیسی نے کیسے کیسے منافق چہروں سے نقاب اتار دیا ہے۔ انصار عباسی صاحب جو کہ خود اپنے چینل جیو کے بارے میں کہا کرتے تھے کہ جیو میں کئی صحافی کرپٹ ...ہیں اور دوسروں سے پیسے لے کر گیم پلان بنا کر اپنے ہی ملک کے اداروں کو ٹارگٹ کرتے ہیں۔ واقعی وقت بدلتے دیر نہیں لگتی آج یہھی صاحب دوسروں سے لفافے کے کر عدلیہ, جے آئ ٹی اور دیگر اداروں کو متنازعہ بنا کر نواز شریف کی کرپشن بچانا چاہ رہے ہیں۔

See More

پاکستان تحریک انصاف کا وزیراعظم کے نام ایک اور اہم خط، وفاقی حکومت کے ماتحت آئی-بی کے ہاتھوں قومی دولت کے ضیاع، ایس-ای-سی-پی میں غیرقانونی بھرتیوں پر جواب طلب. خط پی-ٹی-آئی کی سینئر رہنما عندلیب عباس نے تحریر کیا

No automatic alt text available.
No automatic alt text available.
No automatic alt text available.

عمران خان ہمارے کلچر کو تباہ کررہا ہے
------------------------------------------
یہ جملہ آج کل پٹواری دانشوران ہر جگہ بولتے نظر آتے ہیں اور اگر ان سے وجہ پوچھیں تو ان کا جواب یہ ہوتا ہے کہ عمران خان اپنے جلسوں میں نوازشریف کو " اوئے " کہہ کر مخاطب کیا کرتا تھا اور اس کی جماعت کے سپورٹر سوشل میڈیا پر گالم گلوچ کرتے ہیں۔

آئیں زرا غیرجانبداری سے ان پٹواری دانشوڑان کی اس بات کا پوسٹ مارٹم کرتے ہیں:

...Continue Reading
Image may contain: 3 people, people smiling

چیرمین پی ٹی آئی

Image may contain: 1 person, text

سچ اور لفافے لے کر جھوٹ بولنے میں فرق

یوں تو جنگ اور جیو آج کل جے آئی ٹی کے معملات میں نواز شریف کی بی ٹیم بنا ہوا ہے لیکن یہ لفافی تو بین الاقوامی مسائل میں بھی نواز شریف سے لفافے لے کر جھوٹ بولنا شروع ہوچکے ہیں.

جسکی ایک مثال ابھی حال ہی میں نواز شریف کا دورہ سعودی عرب تھا جس میں جیو کے مطابق نواز شریف ثالثی کا کردار ادا کرنے گئے تھے لیکن جھوٹ کا بھانڈا سعودی سفیر نے ہی پھوڑ دیا.

Image may contain: text

پاکستان تحریک انصاف کی نئی تنظیم سازی کا نوٹیفیکیشن

No automatic alt text available.

تحریک انصاف میں خوش آمدید...!
پیپلزپارٹی کے سنئیر رہنما، موجودہ سینیٹر اور سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر بابر اعوان نے چئیرمین عمران خان کے ساتھ ملاقات کے بعد پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کا اعلان کر دیا

Image may contain: 3 people

3 times PM Nawaz Sharif has NOT given Pakistan even ONE quality standard university or hospital where the royal family can go.

Shame, not pride!

Image may contain: 1 person, text

واہ رے پاکستانی جمہوریت کے نرالے انداز

کرپشن کرنے پر جمہوریت خطرے میں نہیں آتی, لیکن کرپشن پکڑے جانے پر جمہوریت خطرے میں آجاتی ہے

No automatic alt text available.

#اسٹیبلشمنٹ

1988 میں اسٹیبلشمنٹ کی تمام تر مخالفت کے باوجود بینظیر 88 سیٹیں جیت کر مرکز میں حکومت بنانے میں کامیاب ہوگئی۔ وزیرداخلہ کیلئے اسے کسی دبنگ پنجابی کی تلاش تھی اور اس کیلئے نظرانتخاب اعتزاز احسن پر پڑی جو کہ لاہور سے بھاری مارجن سے جیتا تھا اور اس وقت ایک ینگ اور پڑھے لکھے سیاستدانوں میں شمار ہوتا تھا۔

اعتزاز احسن نے نہ صرف قومی اسمبلی میں اپوزیشن بلکہ پنجاب میں وزیراعلی نوازشریف کو بھی بے حال کررکھا اور انہیں آئے دن یہی دھڑکا لگا رہتا کہ کہیں اعتزاز ان کے بندے توڑ...

Continue Reading
Image may contain: 1 person, beard
Posted by PTI Punjab
6,547 Views
6,547 Views
PTI Punjab

تجربہ کار حکومت ملکی ادارے تباہ کرنے کے تجربے کرنے میں مصروف

سنیے نواز شریف کی پی آئی اے کے بارے میں الیکشن جیتنے سے پہلے کی پالیسی اور الیکشن جیتنے کے بعد اب کس طرح یہ لوگ پی آئی اے کو تباہ کررہے ہیں.

واہ میاں صاحب واہ کوئی شرم ہوتی ہے کوئی حیا ہوتی ہے

تحریک انصاف اور پاکستان نہیں چھوڑ رہا پاکستان کے لوگوں کی خدمت کیلیے برطانوی شہریت چھوڑی' بے بنیاد افواہوں کو رد کرتا هوں
چوهدری محمد سرور
مرکزی رهنما پاکستان تحریک انصاف

Image may contain: 1 person, text
Posted by PTI Punjab
3,456 Views
3,456 Views
PTI Punjab

Chairman PTI Imran Khan Exclusive Interview on Pak News Real Story with Dr Danish (21.06.17)
#IKonPakNews #PanamaPapers #PanamaLeaks #JIT

دیکھیں آج 7pm بجے بول ٹی وی پر عمران خان صاحب کا ڈاکٹر دانش کے ساتھ انٹرویو

Image may contain: 1 person, sitting
Image may contain: 1 person, sitting and indoor
Image may contain: 1 person, sitting and indoor

چوہدری محمد سرور پنجاب کا اثاثہ ہیں اور رہیں گے
شاہ محمود قریشی

Image may contain: 4 people, text
44,775 Views
44,775 Views
Imran Khan (official)

Chairman PTI Imran Khan Exclusive Interview On Samaa TV Awaz With Shahzad Iqbal (20.06.17)
#IKonSamaa #PanamaPapers #PanamaLeaks