Photos
Videos
Choosni Sharing
86
12
Difference Between Normal Cricket and Sultan Rahi's Cricket..:p . #ArbaaZ...!
93
70
Aakhir is Bakrey ko hua kia hai..? . Hahahahahahahah Itna tezz bakra mene aaj tak nahi dekha..:D . #ArbaaZ...!
31
1
Posts

پتر لے گئے نوواں نوں، دھیاں لے گئے ھور
مائ تے بابا ایویں بیٹھے، جیویں بیٹھن چور۔۔۔

#محبتوں_کا_امین

Image may contain: 1 person, standing

چودہ سال کی عمر میں سینے کی سرجری کے بعد جب جیمز ہریسن کو تیرہ لیٹر خون کی ضرورت پڑی تو خون اسے مہیا کر دیا گیا۔۔اس بات کو جیمز ہریسن اپنے اوپر احسان مانا۔۔جب وہ اٹھارہ سال کا ہوا اسے پتا چلا کہ اس کے خون میں ایک خاص قسم کا اینٹی جن ہے جو خون کی بیماریوں کے علاج میں موثر ثابت ہو سکتا ہے۔۔۔اٹھارہ سال کی عمر سے اب تک جب کہ جیمز اسی سال کا ہے۔۔جیمز ایک ہزار لیٹر سے زیادہ خون ڈونیٹ کر چکا ہے اور اس کے دیے گئے خون سے بیس لاکھ سے زیادہ لوگوں کی جانیں بچائی جا چکی ہیں۔۔ جیمز ہریسن کو پلازما بلڈ ڈونر کے نام سے جانا جاتا ہے۔۔

محبتوں کا امین

Image may contain: 2 people, people smiling, indoor
Posts

جو دنیا میں لاحاصل رہ جائے۔۔۔۔۔۔
وہ آخرت میں انعام بن کر ملا کرتے ہیں۔۔۔۔۔

محبت ہو تو نکاح کیجئے
اللہ کو بے نام رشتے پسند نہیں۔۔

زندگی جینے کے دو راستے ہیں بھول جاؤ انہیں جنہیں معاف نہیں کر سکتے اور معاف کر دو انہیں جنہیں بھول نہیں سکتےـ 💔💯
#Hamxo

تمام نئے اور خاص طور پہ پرانے ممبرز۔۔۔۔😍
آپ سب کا اس پیج میں آکر سو نے کا شکریہ😂😂😂
کہو تو رضائیاں بھی منگادوں😕

It looks like you may be having problems playing this video. If so, please try restarting your browser.
Close
58,292 Views
Tickling Vines is with Zapya.

What if Blue Whale tries to mess up with Tickling Vines😄
Ft. Its Od Comedy

Brought to you by: Zapya International
Follow us on Instagram and YouTube

... See More

تو بھی بھرم نه رکھ سکا اپنے خلوص کا ....!
مجھے خود سے بڑھ کر تجھ په غرور تھا ....!

یقین توڑے
گمان چهینے
ملے جو فرصت تو سوچنا کہ
تمہارے لفظوں نے میری آنکھوں سے
کیسے کیسے جہان چهینے...!! !

گھر قریب آ چکا تھا، میں نے بائیک مین روڈ سے اپنی گلی کی طرف موڑ لی۔۔

لگتا تھا کہ لائٹ گئی ہوئی ہے، کیونکہ گلی میں اندھیرا تھا اور گھروں سے جنریٹرز کے چلنے کی آوازیں آ رہی تھیں۔۔

اچانک ایک نقاب پوش بائیک کے ایک دم سامنے آ گیا، میں نے گھبرا کر بریک لگائی اور اس سے قبل کہ میں کچھ سمجھ پاتا، اس نے بائیک کے قریب آ کر پستول میری کنپٹی سے لگا دیا اور آواز کو دباتے ہوئے بولا:...
موبائل نکالو۔۔۔۔

میں نے فوری طور پر نتائج کی پرواه کیے بغیر اس کو زور کا دھکا دیا،
اور وه جو بائیک سے چپکا کھڑا تھا، اس فوری ری ایکشن کے لیے شائد تیار نہ تھا، لڑکھڑا کر زمین پر گر گیا۔۔۔۔

میں نے اُسکو جا لیا،
اور تین چار تھپڑ کس کس کر لگائے۔۔۔۔

اسکے ہاتھ سے پستول گر چکا تھا،
میں نے اسکو قابو کیا،
اور ایک ہاتھ سے اسکا نقاب اتار دیا۔۔۔۔

اسکی شکل دیکھ کر میری حیرانی کی انتہا نہ رہی، وه کوئی اور نہیں، میرا اپنا نوکر تھا، جو کہ آج چھٹی پر تھا۔۔۔۔
میں چیخ پڑا:
احسان فراموش، مجھے شک تیری آواز سے ہی ہو گیا تھا۔۔
تو نے جس گھر کا نمک کھایا، وہیں نمک حرامی کی۔۔۔۔۔۔؟
ہم تجھ سے حسن سلوک سے پیش آتے تھے،
تنخواه کے علاوه بھی وقت بے وقت تیرے کام آنے کی کوشش کی،
اور تُو نے اس کا یہ صلہ دیا کہ پستول لیکر آ گیا۔۔۔۔۔۔؟

اسکی شکل رونے والی ہوگئی:
نہیں صاحب، وه پستول نقلی ہے،
آپ خود چیک کر لیجیے۔۔۔۔

میں نے غصّے سے پوچھا:
تو پھر اس حرکت کی کیا ضرورت تھی؟
اگر پیسوں کی ضرورت تھی تو مجھ سے یا بیگم صاحبہ سے کہنا چاہیئے تھا، اب چلو سیدھے تھانے۔۔۔۔۔۔

وہ گھبرا کر بے اختیار بول پڑا:
نہیں نہیں صاحب، تھانے مت لے جائیے،
یہ حرکت میں نے بیگم صاحبہ کے کہنے پر ہی کی ہے۔۔۔۔۔۔۔۔

کیا۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!!!!
میرے سر پر گویا حیرت کا آسمان گر پڑا تھا۔۔۔۔

وه رونی صورت بنا کر بولا:
جی ہاں صاحب،
بیگم صاحبہ نے بولا تھا،
گھر آ کر وہ اِس منحوس موبائل میں ہی ہر وقت گھسے رہتے ہیں،
تجھے ہر قیمت پر آج یہ موبائل چھیننا ہے،
ورنہ تیری نوکری سے چھٹی۔۔۔۔ 😁😂

محبتوں کا امین

See More
Image may contain: 1 person, closeup
محبتوں کا امین

مجھے خاموش رہنا ہے عورت ذات جو ٹھہری۔۔۔

صرف ایک دن کے لئے اپنے سب کام آنکھیں بند کرکے ، اندھوں کی طرح کرو ذرا ۔ ۔
بنو ذرا ایک دن کے لئے بہرے ۔۔۔ بند کرو اپنے کانوں کو روئی سے ۔ ۔ ۔
چلو ذرا آؤ جاؤ صرف ایک ٹانگ پر لنگڑا کر دن بھر ۔ ۔ چلو وہیل چیئر پر ہی گزارو سارا دن ۔ ۔ ۔
پورا دن بیڈ پر ایک ہی پوزیشن پر لیٹ کر تو گزارو ۔ ۔
کرو نا سب کام ذرا ہاتھوں کو استعمال کیے بغیر ۔ ۔ ...
بنو ناں ذرا ایک دن کے لئے ہی گونگے اور سمجھاؤ سب کو اشاروں سے ۔ ۔
صرف ایک دن کے لئے بس ۔ ۔یا چلو آدھے دن کے لئے ہی سہی ۔
کر کے دیکھو ایسا سب ذرا ۔ ۔ ۔
شاید تب تمہیں احساس ہو کہ تم پر کتنی رحمتیں, کرم اور آسانیاں ہیں ۔ ۔ شاید تب تم سب بھول سکو اپنی ناکامی ، ہار ، کھو دینے کا رونا ، اداسی ، غم ، درد وغیرہ وغیرہ
چپ ہو جاؤ پلیز ۔ ۔ خاموش رہو اب
بند کرو شکوے ، شکایتیں , خود پر ترس
بے نیاز بن جاؤ ۔ ۔
ہر حال میں "شکر گزار" بن جاؤ بس
سمجھ جاؤ گے ۔۔
تو
سنور جاؤ گے۔۔۔۔۔!!!

See More

ایک دوست کی عیاد ت کرنے جانا ہوا، سال ڈیڑھ پہلے اُس کا پہلوانوں جیسا تگڑا وجود، بلند قد و قامت، فنِ تعمیر میں کمال مہارت رکهنے والا ذہین مِعمار، انتہائی بااَثر اور بارُعب شخصیت کا مالک، آج... آج اُس کو بیماری میں بےبس دیکھ آیا ہوں، باتوں باتوں وہ کہنے لگا، اب میرا وزن 70 کلو ہے۔
سال بهر بیمار رہنے کے باوجود اگر اب 70 کلو وزن ہے تو بیماری سے پہلے کیا وزن تها؟
میں نے تعجّب سے پوچها،
103کلو ۔۔۔ وہ بولا، یرقان ہوا، اُس کا علاج کرایا، گُردے کام کرنا چهوڑ گئے، اب گردوں کا عارضہ ہے،... اگر ایک کلو پانی پیتا ہوں، اِخراج آدها کلو ہوتا ہے، آدها پیٹ میں رہ کر نقصان دیتا ہے، گردے واش کرواتا ہوں تب جا کر سکون ملتا ہے۔
کتنے دنوں بعد گردے واش کرواتے ہو، اور کتنے پیسے لگتے ہیں؟ میں نے پوچها!
ہر چوتهے روز چار ہزار لگتے ہیں، اُس نے کہا!
پاس ہی دو سلنڈر پڑے تهے، میں نے اِن کے بارے استفسار کیا تو وہ بولا:
آکسیجن کی کمی ہوجاتی ہے، تو ان سے آکسیجن کی کمی پوری کرتا ہوں، یہ جو چهوٹا سلنڈر ہے، یہ 300 میں بهر دیتے ہیں، دن میں 3 بار بهرواتا ہوں، اب بڑا سلنڈر لیا ہے یہ 800 میں بهر دیتے ہیں، آج چوتها دن ہے، یہ بهی اب ختم ہے۔
تسلی اور دعا لینے کے بعد میں واپسی ہونے لگا، تو اُس نے کہا۔۔۔ میرے لیے دعا...!!!
میں نے جونہی دعا کے لیے ہاته بلند کیے، میرے آنسو رکنے کا نام نہیں لے رہے تهے، میں مانگنا بهول گیا، بس اِک سوچ تهی یا پهر آنسو، کہ یہ مریض روزانہ آکسیجن 900کی لیتا ہے اور میں مفت،
یہ پانی پیتا ہے اِخراج کے چار ہزار ادا کرتا ہے اور میں مفت،
یہ کئی مہینوں سے بستر سے اُٹھ نہیں سکتا اور میں گهوم پهر رہا ہوں،
مجه پہ کتنا کرم ہے تیرا اے میرے اللہ، میرے مولا، مگر میں پهر بهی شکرگزار بندہ نہ بنا، بس اِسی سوچ اور آنسو کی برسات میں میں نے ہاتھ اپنے منہ پہ پهیرے، اور تشکّر کے آنسو لیے وہاں سے یہ شعر دل میں پڑهتے رخصت ہوا...!

جہاں میں عبرت کے ہیں ہر سُو نمونے
مگر تُجھ کو اَندها کیا ہے رنگ و بُو نے...

محبتوں کا امین

See More

"""روایت"""
--------------------------

شادی کی پہلی رات اس نے اس کا گھونگھٹ اٹھا کر کہا۔۔۔
سنو!...
یہ شادی ایک زبردستی کا فیصلہ تھا۔۔۔
میں کسی اور کو چاہتا تھا مگر میرے گھر والے راضی نہیں ہوئے۔۔۔
ابا کو دل کی تکلیف تھی اس لئے ان کے آگے لڑ نہ سکا۔۔۔
میری "ہاں" ایک مجبوری تھی۔۔
شائد میں تمہیں زندگی میں وہ پیار نہیں دے سکوں گا جس کی تم حقدار ہو۔۔
یہ کہہ کر وہ اٹھا اور دوسرے کمرے میں چلا گیا۔۔۔

وہ گم صم بیٹھی خالی کمرہ دیکھ رہی تھی۔۔
من میں آٰیا وہ بھی چیخ چیخ کر بول دے۔۔۔
ایک تم ہی کیا۔۔
میں بھی کسی کو دل و جان سے چاہتی تھی۔۔
زندگی گزارنا چاہتی تھی اس کے ساتھ۔۔ غریب تھا۔۔۔ پر محنتی تھا۔۔۔ بس گھر والوں کو پسند نہ آیا۔۔۔ میں بھی ہار گئی۔۔۔
تم سے شادی ہو گئی۔۔
تم مرد تو کہہ سکتے ہو ہم عورتیں کیسے کہیں۔۔۔؟؟

جذبات تھے کہ لفظوں کا پیرہن چاہ رہے تھی۔۔۔جیسے کہہ رہے ہوں۔۔یہ چپ کی روایت توڑ دو آج۔۔۔توڑ دو۔۔۔۔
مگر حلق تک آتے آتے۔۔۔لفظوں نے اشکوں کی شکل لے لی۔۔۔۔
آواز دم توڑ گئی۔۔
وہ روایت نہ توڑ سکی۔۔۔۔!!
.
از : محبتوں کا امین

See More