Photos
Posts

A beautiful and romantic English novel
" The Prime of Miss Jean Brodie"

https://play.google.com/store/apps/details…

Alchemist Novel now in play store ... Download now and Read it

Posts

#Ashoo
پروفیسر حسان پروجیکٹر آن کر کے سلائیڈ دیکھ رہے تھے' تبھی زوار کی آواز آئی
”سر ایک question ہے ....“
”جی پوچھیں“ انہوں نے سلائیڈ کو دیکھتے ہوئے ہی جواب دیا۔
”سر Idealism پہ ہے مطلب کہ ہمیں کسی کو کتنا Idealize کرنا چاہئیے ؟؟“ ...

Continue Reading

ہم تو ہنستے ہیں دوسروں کو ہنسانے کی خاطر😋
ورنہ دل پر زخم اتنے ہیں کہ رویا بھی نہیں جاتا😥
#Princess

Need admins for this page
Inbox me if interested

Who is your favorite writer?

Admin | Khubaab

سو بار چمن مہکا۔سو بار بہار آئی۔
دُنیا کی وہی رونق۔دل کی وہی تنہائی۔

" دنیا میں وہ قومیں بے مثال ترقی کرتی ہے جو "اپنی قومی زبان" کا دامن ہاتھ سے چھوٹنے نہیں دیتیں. پھر عرش ہو یا فرش ہر جگہ ان کے نام جھنڈے گڑھے ہوتے ہیں۔"
~ یارم از سمیرہ حمید

ایڈمن خباب رحمن انصاری

Aik.aur charagh gull ho gya
May her soul rest in peace

Image may contain: one or more people and text

بارش _ موسم_ ہوا
اب کے بارش میں تو یہ کار زیاں ہونا ہی تھا
اپنی کچی بستیوں کو بے نشاں ہونا ہی تھا
کس کے بس میں تھا ہوا کی وحشتوں کو روکنا
برگ گل کو خاک شعلے کو دھواں ہونا ہی تھا...
جب کوئی سمت سفر طے تھی نہ حد رہ گزر
اے مرے رہ رو سفر تو رائیگاں ہونا ہی تھا
مجھ کو رکنا تھا اسے جانا تھا اگلے موڑ تک
فیصلہ یہ اس کے میرے درمیاں ہونا ہی تھا
چاند کو چلنا تھا بہتی سیپیوں کے ساتھ ساتھ
معجزہ یہ بھی تہہ آب رواں ہونا ہی تھا
میں نئے چہروں پہ کہتا تھا نئی غزلیں سدا
میری اس عادت سے اس کو بدگماں ہونا ہی تھا
شہر سے باہر کی ویرانی بسانا تھی مجھے
اپنی تنہائی پہ کچھ تو مہرباں ہونا ہی تھا
اپنی آنکھیں دفن کرنا تھیں غبار خاک میں
یہ ستم بھی ہم پہ زیر آسماں ہونا ہی تھا
بے صدا بستی کی رسمیں تھیں یہی محسنؔ مرے
میں زباں رکھتا تھا مجھ کو بے زباں ہونا ہی تھا
(سید محسن نقوی شہید)

See More

لوگوں کے لئے صاحب کردار بھی میں تھا
خود اپنی نگاہوں میں گنہگار بھی میں تھا
کیوں اب میرے منصب کی سلامی کو کھڑے ہو
یارو کبھی رسوا، سر بازار بھی میں تھا
میں خود ہی چھپا تھا کف قاتل کی شکن میں...
مقتول کی ٹوٹی ہوئی، تلوار بھی میں تھا
چھینٹے ہیں جہاں اب، میرے معصوم لہو کے
اس فرق فلک ناز کی دستار بھی میں تھا
میری ہی صدا لوٹ کے آئی ہے مجھی تک
شاید حد افلاک کے، اس پار بھی میں تھا
منزل پہ جو پہنچا ہوں، تو معلوم ہوا ہے
خود اپنے لئے راہ کی دیوار بھی میں تھا
اب میرے تعارف سے، گریزاں ہے تو لیکن
کل تک تيری پہچان کا معیار بهی میں تھا
دیکھا تو میں افشا تھا ہر اک ذہن پہ محسن
سوچا تو، پس پردہء اسرار بھی میں تھا
(سید محسن نقوی شہید)

See More
Urdu Novels updated their cover photo.
Image may contain: night
Urdu Novels added a new photo.
No automatic alt text available.

Aankh Kehti hy k unhain Dekha hy Aik nAzar
Dil kehta hy ke Sadio Ki Shanasai hai

بڑی منزلوں کے مسافر چھوٹا دل نہیں رکھتے۔
واصف علی واصف

Kabhi thak k so gaye hum kabhi raat bhar na soye
Kabhi hans k moonh chupaya kabhi moonh chupa k roye,
Meri dastan-e-hasrat wo suna suna k roye
Mere azmany walay mujhy azma k roye,
koi asa ahl-e-dil ho k fasan-a-muhabat....
main use suna k royon wo mujhe suna k roye.
meri arzoo ki dunya,dil-e-natwan ki hasrat.
jase kho k aaj shadman thy,use aaj pa k roye.
teri bewafaon per,teri kaj adaon per.
kabhi ser jhuka k roye,kabhi moun chupa k roye.
Shab-e-ghum ki ap beeti jo sunaie anjuman main
Kyie sun k muskuraye kyie muskura k roye,
Main hoon be-watan Musafir mera naam be-kasi hai
Mera koi b nahi hai jo galy laga k roy,
Mere pas se guzar kar mera haal tak na poochha
Main ye kese maan jaon k wo door ja k roye . . !

See More

ٹُر گئے لوگ سیانے بیبا
پیپل ہیٹھاں حُقّے رہ گئے